Image result for monument valley
ہر چیز سے عیاں ہے،ہرشے میں نہاں ہے،خالِق کائنات، مالِک کائنات
عقلِ کُل،توانائی کُل، ہمہ جہت، ہمہ صِفت،خالِق کائنات، مالِک کائنات
آنکھیں کہ جِن سے میں دیکھا ہوں میری نہیں، عطائے خُداوندی ہے
  پاؤں کہ جِن سے میں چل تا ہوں میرے نہیں،عطائے خُدا وندی ہے
غرض یہ کہ میرے  وجود کا ذرہ  ذرہ   میرا  نہیں ،عطائے خُداوندی ہے
میرے خالِق میرے مالکِ میرے پروردگارانِ نعمتوں کا بے انتہا شُکریہ  


Friday, March 30, 2012

'' الیکشن خونی ہونگے ''

منجانب فکرستان پیش ہیں:- "تبصرے" اناؤنسمنٹ،  فرزانہ راجہ،  جرائم پیشہ، خفیہ کوڈ۔۔
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
ایکسپریس نیوز:- 60 اہم شخصیات "ن لیگ" میں شامل ہونگی۔امیر مقام۔
٭:-شمولیت کی وجہ۔۔ باری کے کھیل میں۔۔ باری ن لیگ کی بنتی ہے۔۔لیکن کالم نگار "حسن نثار" اپنے کالم میں کہتے ہیں کہ" اگر آنے والے دنوں میں عوام مین اسٹریم سیاسی پارٹیوں سے نجات حاصل کرنے میں ناکام رہتے ہیں تو خاکم بدہن یہ ملک ایکسپلوڈ نہیں امپلوڈ کر جائے گا" مزید کہتے ہیں کہ "مجھے ذاتی طور پر قطعاً کوئی شک نہیں کہ ملک کے خود غرض اور نیم خواندہ حکمران شعوری یا لاشعوری طور پر اس ملک کا بھٹہ بٹھانے میں مصروف ہیں۔۔۔آخر میں عوام کو مشورہ دیتے ہوئے  کہتے ہیں کہ" تاجروں ، صنعت کاروں ، جاگیرداروں اور قبائلی سرداروں سے مُلک کو چھُڑالو،  ورنہ جان لو کہ تاریخ اپنا فیصلہ محفوظ کر چُکی ہے۔۔۔صرف اناؤنسمنٹ باقی ہے،جسے نہ کوئی" لیپ ٹاپ" روک سکتا ہے ،نہ فرزانہ راجہ کا "لولی پاپ" المعروف بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام " ۔۔۔
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ 
ایکسپریس نیوز:-  کراچی میں وزیرستان سے زیادہ اسلحہ موجود ہے۔الیکشن سے قبل  جرائم پیشہ افراد کو گرفتار نہ کیا گیا تو الیکشن خونی ہونگے۔ نبیل گبول ۔
٭:- محترم حکومت تو آپ ہی کی ہے۔ جرائم پیشہ افراد کی گرفتاری اور اسلحہ کی بازیابی کس کی ذمہ داری ہے؟  کیا یہ آپکی حکومت کی ذمہ داری نہیں ہے ؟؟؟ 
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
 جنگ نیوز:- آئی ایم ایف کے سابق سربراہ اپنے دوستوں اور خواتین کے دلالوں کے نام پیغامات میں خواتین کیلئے ،سامان اور ایکوئپمنٹ کے خفیہ کوڈ استعمال کرتے تھے ۔۔
٭:- آئی ایم ایف کا یہ بوڑھا سربراہ تو، بڑا ہی عورت باز نکلا۔۔۔ 
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
میرے تبصروں سے اتفاق کرنا ضروری نہیں۔۔۔اب اجازت دیں آپکا بہت بہت  شُکریہ۔ (ایم ۔ ڈی)

Thursday, March 29, 2012

'' حلف اُٹھاتے ہی جھوٹ بولتے ہیں ''

منجانب فکرستان پیش ہیں: تبصرے: ماہرینِ فلکیات،چوہدری شجاعت، 4سال، رحمان ملک، 97فیصد۔
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
بی بی سی نیوز:-بڑی تعداد میں"سُپر ارتھ" دریافت ہوگئے ہیں، ماہرینِ فلکیات۔ 
٭:- کسی پر"سُپر مخلوق"بھی ہوگی،مگر خُدا کرے وہاں "ارتھ" جیسی شیعہ، سُنی،اہل حدیث،دیو بندی، بریلوی یعنی ایک دوسرے کو کافر کہنے والی مخلوق  نہ ہو ورنہ جو حشر اِس مخلوق نے اِس ارتھ کا بنایا ہوا ہے، وہاں پر بھی ایساہی ہو رہا ہوگا  تو پھر وہ "سُپر"کہلانے کی مستحق نہ ہوگی۔۔۔ 
ایکسپریس نیوز:-ارکانِ پارلیمنٹ حلف اٹھاتے ہی جھوٹ بولتے ہیں،چوہدری شجاعت۔
٭:- چوہدری صاحب یہ آپ نے کیا کہہ دیا اِن میں تو پابند نماز بھی ہیں، جو دن میں پانچ بار خُدا کے گھر میں خُدا سےصراطِ مستقیم پر چلنے کی مدد مانگتے ہیں۔ 
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
جنگ نیوز:-مسائل اتنے ہیں،حکومت نے 4 سال کہاں گُذارے؟ نواز شریف کا سوال۔ 
٭:-یہ سوال تو اُلٹا اپوزیشن سے ہونا چاہئیے کہ اُس نے 4 سال کہاں گُذارے ؟ملک میں مسائل فرینڈلی اپوزیشن کی وجہ سے بڑھے ہیں ۔۔۔

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
جنگ نیوز:- ایک قاتل 34 بار پکڑا گیا اور رہا ہوگیا ، 200 ٹرک اسلحہ کی ترسیل میں استعمال ہورہے ہیں، کراچی میں جرائم پیشہ افراد سے کوئی بھی محفوظ نہیں ہے۔ وزیرِ داخلہ رحمان ملک ۔ 
٭:- کیا یہ جرائم پیشہ افراد کے مقابلے میں حکومت کا اعتراف شکست ہے ؟؟؟
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ  
جنگ نیوز:- فضائی دفاع 97 فیصد ناکارہ ہوچُکا ہے، بھارتی آرمی چیف کا وزیراعظم منموہن سنگھ کو خط۔
٭:- چیف صاحب یہ 97 فیصد ناکارہ کا اچانک انکشاف اور رٹائرڈ ہوتے وقت خط لکھنے خیال کیوں آیا ؟؟کہیں اسکا تعلق تاریخ پیدائش والے معاملے سے تو نہیں ہے ؟؟؟
میرے تبصروں سے متفق ہونا ضروری نہیں۔اب اجازت دیں آپ کا بُہت بہت شُکریہ ۔(ایم۔ ڈی)

Wednesday, March 28, 2012

'' قانونِ فطرت ''

منجانب فکرستان پیش ہیں:''تبصرے'' کراچی، فتویٰ، پنیٹا، وکٹوریہ ،98٪،امیرمقام  ،روس۔
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
1#:کراچی میں امن وامان کی بگڑتی صورتحال کی وجہ کیا ہے؟٭: وجہ یہ ہے کہ بھتہ خور گروپس بھتہ کیلئے اپنے اپنے علاقوں کو وسعت دینے کی لڑائی لڑرہے ہیں ،جبکہ حکومتی رٹ سوالیہ نشان؟بنی نظر آتی ہےخبر#2:ن لیگ اور سندھ نیشنل فرنٹ انضمام کیلئے مزاکرات جاری ہیں٭:لیاقت جتوئی ،ماروی اور امیر مقام شمولیت بھی "ن لیگ" کی اسی پایسی کا حصہ ہے۔ اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا" ن لیگ" کی اس پالیسی  سے ملک میں کسی قسم کی تبدیلی آسکتی  ہے ؟؟؟ کیا یہ گھاگ لوگ بغیر بار گینگ کئے ن لیگ میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں ۔خبر#3: جنگیں عوامی سروے پر نہیں حکومتی حکمتِ عملی کی بنیاد پر لڑی جاتیں ہیں۔امریکی وزیر دفاع  پنیٹا٭:چند لوگوں کی جنگی حکمتی عملی کی سزا پوری قوم کو بھگتنا پرتا ہے،محترم پینٹا صاحب اس خبر پر بھی ایک نظر ڈالئیےکہ 98 فیصد فوجیوں نے جنگ سے امریکہ واپسی کے بعد بار بار سر کے درد کی شکایت کی۔٭: کوئی مانے یا نہ مانے یہ حقیقت اپنی جگہ پر اٹل ہے کہ قانونِ فطرت صراطِ مستقیم پر نہ چلنے والوں کو سزا دیتی ہے۔خبر#4:امریکہ پاکستان کی خودمختاری کا احترام کرتا ہے ، امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان وکٹوریہ نولینڈ٭: کیا ڈرون حملے اسی خود مختاری کے احترام میں کئے جا تے ہیں خبر#5: پولیس حراست میں جنسی تشدد اور ہلاکتوں نے روسی پولیس کے کردار پر سوالیہ نشان ؟ لگا دیا ہے٭: میرے خیال میں پاکستان میں روس سےبھی  زیادہ خراب صورتِ حال ہوگی لیکن ظاہراً نظر نہیں آتی ؟؟؟خبر#6:  نیٹو سپلائی کھولنا غیر شرعی ہے،50 مفتیان کا فتویٰ ٭:ایسے میں پارلیمنٹ کا فیصلہ ؟؟؟ 

Monday, March 26, 2012

'' حلق کی ھڈی ''

منجانب فکرستان پیش ہے : تبصرے ۔۔۔ (ایم ۔ڈی)۔کے۔  
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ 
فاخرہ/سونامی بریک/اکلیش یادو لیپ ٹاپ/سعودی عرب/نواز شریف،عمران خان،ثروت قادری ،بلور۔ 
1#: پاکستان کے حکمرانوں کی بے حسی اور قانون کی خاموشی پر خودکشی کررہی ہوں۔۔فاخرہ۔۔۔۔
٭جب چاہا محبت سے چہرہ  چوم لیا۔۔۔جب چاہا نفرت سے چہرہ جلادیا ۔۔۔۔ 2#: کیا سونامی کو بریک لگ گئی ؟ حامد میر۔۔۔٭: محترم بریک لگتی نہیں لگائی جاتی ہے، میں سمجھتا ہوں سونامی کی  انرجی کو بچانے کیلئے بریک لگائی گئی ہے، تاکہ بچائی جانے والی انرجی الیکشن کے دنوں میں۔۔دھے دھنا دھن میں۔۔ کام آئے ۔۔۔۔  3#:انڈیا میں 38 سالہ اکھلیش یادو نےالیکشن جیتنے پر طلبا کو مفت لیپ ٹاپ دینے کا وعدہ کیااور کامیابی ایسی حاصل کی کہ کم عمر وزیر اعلیٰ کا ریکارڈ بنا گئے۔۔۔۔ ٭: لیپ ٹاپنسخہ کی کامیابی کو دیکھتے ہوئے شہباز شریف کے سر میں بھی لیپ ٹاپ کا اکھوا نکل آیا اور طلبا کومفت لیپ ٹاپ دے دیے۔ مگر دونوں کے دینے میں فرق ہے وہ یہ کہ اکھلیش یادو نے کہا تھا الیکشن میں کامیاب کراؤگے تو لیپ ٹاپ دونگا۔۔۔جبکہ شہباز شریف الیکشن سے پہلے لیپ ٹاپ کا دانہ ڈال رہے ہیں۔  لیکن یہ بھی اپنی جگہ ایک حقیقت ہے کہ دانہ چگنے کے بعد پرندے اُڑجاتے ہیں۔۔۔۔ 4# امریکی دشمنی مہنگی پڑسکتی ہے نیٹو سپلائی بحال کی جائے ۔بلور۔۔۔۔ ٭:اے ۔این ۔پی، بائیں بازونظریات کی جماعت ہے۔ اسی لیے پارٹی کا جھنڈا سرخ رنگ ہے، مگر لگتا ایسا ہے کہ زمانے کی ہوا نے اسکا رخ بائیں سے  دائیں جانب موڑ دیا ہے۔۔۔۔ 5#: چار سال مکمل ہونے پر حکومت کو کس چیز کی مباک بادوں؟نواز شریف کا غصہ ۔۔۔۔٭: نواز شریف کا غصہ بجا ہے ، بلکہ حکومت کو چاہئیے کہ نواز شریف کو مبارک باد دے کیونکہ فرینڈلی اپوزیشن کا کردار بخوبی نبھایا ، اِن 4سالوں میں شاید 4 ماہ بھی پاکستان میں نہیں رہے، عوامی ووٹ کے تقدس کا بھی خیال نہیں کیا ۔۔۔۔ 6#: اقتدار ملنے پر 9 دن میں آدھی کرپشن ختم کر دیں گے۔۔ عمران خان ۔۔۔۔٭:ایسی دعوے والی باتوں پر مولانا فضل الرحمان ناراض ہوتے ہیں اور کہا کرتے ہیں کہ" منہ سے ایسی بات نہیں نکالنی چاہئیے جو بعد میں حلق کی ہڈی بن جائے "۔۔۔۔ 7#: پاکستان کو فلاحی ریاست بناکر دم لیں گے ۔ثروت اعجاز قادری۔۔۔۔
٭: پاکستان کی سیاسی ومذہبی جماعتیں اور فوجی حکومتیں پچھلے 65 سال سے پاکستان کو فلاحی ریاست بنا نے کا  کام کر رہی ہیں۔ اب تک یہ کتنی فلاحی ریاست بن پائی ہے دنیا میں اسکی مثال ملنا مشکل ہے اب آپ بھی فلاحی ریاست بنانے میں اپنا حصہ ڈالنا چاہتے ہیں۔۔۔ خوش آمدیدہے۔۔۔۔8#: سعودی عرب اولمپک میں پہلی بار خواتین ایتھلیٹس بھیجنے پر غور۔۔۔۔ 
 ٭: کیا ہم درج بالا خبر کو زمانے کی ہوا کا شاخسانہ نہیں کہیں گے؟؟؟ اب اجازت دیں ۔۔۔تبصروں سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔(ایم ۔ ڈی)

Saturday, March 24, 2012

'' مفکر کی ذاتیات / مفکر کی فکریات ''

منجانب فکرستان پیش ہے۔کیا مفکر کی ذاتیات اور مفکر کی فکریات/ دو مختلف حلقے  ہیں ؟؟؟ 
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
نام کتاب ''استقرائی استدلال اور فکرِ اقبال'' فکری کاوش جناب خالد الماس'' صفحہ 145 پر لکھا ہے  کہ ایک  دفعہ اقبال نے اپنے اور بنگالی شاعر رابندرناتھ ٹیگور کی شاعری کا موازنہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ/ ٹیگور کی شاعری بے عمل ہے/ جب کہ وہ انسان باعمل  ہے/ میں بے عمل انسان ہوں/ جب کہ میری شاعری با عمل ہے ۔ اقبال کے اس بیان سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ مفکر کی ذاتیات /مفکر کی فکریات/ دو مختلف حلقے ہیں انکو آپس میں ملانا نہیں چاہئیے ۔۔۔ یہ تو ہوئیں مفکر لوگوں کی مفکرانہ باتیں ۔۔۔۔
آئیں اب ہم روز مرہ زندگی میں عام لوگوں باتیں کریں ، مثلاً  ڈاکٹر حضرات سگریٹ نوشی کے نقصانات گِنوا کر لوگوں کو سگریٹ نوشی ترک کرنے کا مشورہ دیتے ہیں، لیکن خود  اس پر عمل نہیں کرتے ہیں ، والدین بچوں کو جھوٹ نہ بولنے  کا درس دیتے ہیں، لیکن خودجھوٹ بولتے ہیں ، ہم جن باتوں کو دوسروں میں دیکھنا پسند نہیں کرتے/ اُن ہی باتوں کو ہم خود اپنائے ہوئے ہوتے ہیں / ہم دوسروں سے   جن اچّھی باتوں کے طالب ہیں / اُن اچّھی باتوں کو ہم نے اپنے پر لاگو نہیں کیا ہُوا ہے۔ غرض  کہ جب ہم اپنی زندگی پر ایمان دارانہ نظر ڈالتے ہیں تو ہمیں اپنی زندگی میں اسی طرح کےبہت سارے  تضاد نظر آجا تے ہیں۔۔۔۔اگر کسی کو شک ہے تو اپنی زندگی کا ذرا غیر جانب دارانہ محاسبہ کر کے دیکھ لے (  کم یا زیادہ کے اعتبار سے ) قول وفعل کا تضاد صاف نظر آجائے گا ۔۔۔میری رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔اب اجازت دیں آپکا بُہت شُکریہ ۔۔۔(ایم ۔ڈی)             

Wednesday, March 21, 2012

'' اخلاقی معیار بلند ہو گا ''

منجانب فکرستان پیش ہے : ( K ( M.D :1-jokes: تبصرے  :1-jokes:
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
خبر: بھاول نگر تحریک انصاف کے جلسے کے خاتمہ پر بد نظمی۔صوفے کُرسیاں ہوا میں اچھالیں گئیں۔
٭: میرے خیال میں صوفے کرسیاں ہوا میں ایسے ہی نہیں اچلتیں پیسہ انہیں ہوا میں اچھالتا ہے۔ موروثی سیاست دانوں نے سونامی کو روکنے کیلئے سرمائے کا بند باند نے کی ٹھان لی ہے ،جس کی جھلک پرنٹ/الکٹرانک میڈیا میں صاف دیکھی جاسکتی ہے، خاص کر کچھ کالم نگار تو عمران خان کے خلاف اتنے  عریاں انداز میں لکھ رہے ہیں کہ کالم خود گواہی دے رہا ہے کہ پیسے لیکر لکھا گیا ہے۔۔۔ انہیں اپنی آنے والی نسلوں کا کوئی خیال نہیں ہے ۔۔۔ انہیں صرف اپنے لیے پیسے بنانے خیال ہے۔ 
خبر: سندھ میں لائسنس یافتہ اسلحہ لیکر چلنے پر پابندی ختم/ لیکن اسلحہ کی نمائش پر پابندی ہے۔
٭: اسلحہ لیکر چلنا یا اسلحہ کی نمائش کرنا ۔۔۔ کیا فرق ہے؟ یہ گنگا رام کی سمجھ میں نہ آئے ۔
خبر: خیبر پختونخوا، 28 خواجہ سراؤں کی مختلف محکموں میں بھرتیوں کا اعلان۔
٭: مجھے یقین ہے کہ ان بھرتیوں میں معیار کا پورا ،پورا ، خیال رکھا گیا ہوگا۔ اور جن محکموں میں یہ خواجہ سرا بھرتی ہوکر جا رہے ہیں یقیناً اُن محکموں کی نہ صرف کارکردگی بہتر ہوگی بلکہ اخلاقی معیار بھی کافی بلند ہوجائے گا۔۔۔ شاید اسی سوچ کے تحت ہی خیبر پختونخوا حکومت نے یہ فیصلہ لیا ہے۔۔۔     
بشکریہ روزنامہ جنگ/ 21 مارچ ۔
 

Monday, March 19, 2012

ورنہ سہاگ رات ؟؟؟

منجانب فکرستان پیش ہے: تبصرے  xD   K . (  M . D  xD
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
خبر:لکی مروت میں شرپسندوں نے بارودی دھماکوں سے 3 اسکول تباہ کردیے۔۔۔
 ٭جبکہ اسی مقصد کو حاصل کرنے کیلئے سندھ کے جاگیردار زیادہ سمجھدار ہیں وہ اسکولوں کو برباد نہیں کرتے بلکہ انہیں اپنی اوطاق (بیٹھک) بنالیتے ہیں۔۔۔ ۔
خبر: کوسٹ گارڈ کا چھاپہ بھاری مقدار میں غیرملکی شراب پکڑی گئی ۔۔۔
٭ آخر محکمہ کو بھی تو زندہ رکھنا ہے تاکہ روزی روٹی چلتی رہے ۔۔۔۔ 
 خبر: سندھ کے وزیرِ داخلہ نے بھتہ خوری کے خلاف پولیس کو فری ہینڈ دے دیا ۔۔۔
 ٭جواب میں پولیس نے فوری ایکشن لے لیا، ناکے لگا کر موٹرسائیکل والوں سے بھتہ وصولی شروع کردی ہے۔۔۔
خبر: ڈاکوؤں نے دولہا دلہن  باراتیوں کے طلائی زیورات اور نقدی لوٹ کر لے گئے ۔۔۔
٭شُکر کرو دولہا میاں کہ/ آپکی دُلہن کو لے کر نہیں گئے۔۔ ورنہ آپکی سُہاگ رات :0-flowerface::0-flowerface: 
اب اجازت دیں آپ کا بُہت شُکریہ۔۔۔ (ایم۔ڈی)

Saturday, March 17, 2012

'' تبصرے اور تراشہ ''

منجانب فکرستان پیش ہے:- تبصرے :0-16_angry:  ( ایم ۔ ڈی )کے :0-16_angry:
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
٭عاصمہ جہانگیر نے بلوچستان مسئلہ پر کہا کہ لوگوں کو زبردستی ساتھ نہیں رکھا جاسکتا ہے۔۔۔ اور نہ ہی کسی جگہ کو کالونی سمجھا جا سکتا ہے۔۔۔لیکن پنجابیوں کا رویہ اور سوچ یہ ہی رہی ہے ۔۔۔ تبصرہ۔ اسطرح لیبل چسپاں کرنے کا رویہ کبھی میری سمجھ میں نہیں آیا فرانسیسی، برطانوی پر،امریکی، روسیوں پر،چینی، جاپانیوں پر،مسلمان، ہندؤں پر، ھندو، عیسائیوں   پر عیسائی، یہودی پر، کالے گوروں پر اور انکا الٹ بھی ایک دوسرے پر بُرے لیبل لگاتے ہیں غرض کہ یہ لیبل نسلی ،جغرافیائی علاقائی ،مذہبی، جسمانی رنگت اور فرقہ پرستی کی بنیاد پر لگائے جاتے ہیں ، یہ لیبل نہ صرف غیرتعلیم یافتہ بلکہ تعلیم یافتہ بھی لگاتے ہیں ۔اس وجہ  سےیہ کبھی بھی میری سمجھ میں نہیں آئے، شاید مذہبی عقیدوں  کی طرح  یہ لیبلز بھی ایک یقین کی صورت اختیار کر گئے ہیں ۔۔۔٭ تحریکِ انصاف کے چار ٹکڑے ہونے والے ہیں راناثناءاللہ۔۔۔ تبصرہ : سچ ہے کہ/ پیسہ بڑی طاقت ہے ۔۔۔٭ کراچی میں بھتہ ، پرچی مافیا کا راج ہے ۔۔۔۔
 تبصرہ : یہ مفاہمتی بیج کےثمرات ہیں۔۔۔۔
میرے تبصروں سے آپ کا متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔( ایم ۔ڈی )
 درج ذیل تراشہ جنگ 14مارچ سے لیا گیا ہے۔
 

Thursday, March 15, 2012

'' فوجی ایسا کیوں کرتے ہیں ؟؟ ایک جائزہ ''

منجاب فکرستان پیش ہے:افغانی ہمارے ملکوں پر حملہ آور نہیں ہوئے،پھر ہم افغانیوں سے کیوں لڑرہے ہیں؟
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
امریکی فوجی نے بلا وجہ9 بچوں، خواتین سمیت 16افراد کو ہلاک کردیا ،اس سے پہلے قُرآن جلانےاورلاشوں پر پیشاب کرنے کے واقعے پیش آچُکے ہیں۔فوجی ایسا کیوں کر رہے ہیں؟ میرے خیال میں اسکی وجہ یہ ہے کہ نیٹو، امریکی فوجیوں کی دل میں یہ خیال آرہا ہو کہ سیاست دانوں نے ہمیں بلاوجہ/ بے مقصد کی جنگ میں جھونک دیا ہے۔ افغانیوں سے ہماری کیا دشمنی ہے ؟ افغانی ہمارے ملکوں پر حملہ آور نہیں ہوئے ہیں ،پھر ہم افغانیوں سے کیوں لڑرہے ہیں ؟؟؟ افغانیوں سے لڑنے کا کیا جواز ہے ؟؟؟ ہم  بلا وجہ،  بے مقصد،  اور  لاحاصل جنگ کیوں لڑرہے ہیں/ہم کیوں اپنے ملک سے، خاندان سے دور ہیں ، ہم کیوں خوف کے سائے میں اذیت ناک زندگی گذار رہے ہیں۔۔۔۔  اس طرح کی سوچ سخت فرسٹریشن پیدا کرتی ہے، نتیجہ سیاست دانوں کا غصہ وہ معصوم بچوں ، عورتوں اور نہتے لوگوں کو مار کر/ قُرآنی نسخے جلاکر/لاشوں کی بے حرمتی کرکے اُتارتے ہیں۔۔۔امریکہ اور نیٹو ممالک کے سیاست دانوں کو یہ سوچنا ہوگا کہ ایسی بلاوجہ/ بے جواز جنگوں سے اُنکے فوجی ہمیشہ فرسٹریشن میں مبتلا ہونگے۔۔۔ چونکہ ایسی بلا جواز جنگوں میں لڑنے والے فوجیوں میں لڑنے کیلئے جن جذبات کی ضرورت ہوتی ہے ۔۔۔ وہ جذبات  جنگ کے جواز اور مقصد سے نتھی ہوتے ہیں ۔۔۔ جہاں جنگ کا جواز اور مقصد ہی نہ ہو وہاں فوجیوں میں جنگی جذبات کی جگہ فرسٹریشن ہوگا ۔۔۔اور فرسٹریشن میں مبتلا فوجیوں سے کچھ بھی حرکت سرزد ہوسکتی ہے ،جوشرمندگی کا باعث ہوتی ہے ۔ بلا جواز جنگی جذبات سے عاری جنگیں چھیڑنے والوں کو شکست کا منہ  بھی دیکھنا پڑتا ہے ۔۔۔ اب اجازت دیں آپکا بُہت شُکریہ ۔۔۔
میرے خیالات سےمتفق ہونا ضروری نہیں ہے، میں تو اپنے خیالات آپ سے شئیر کر رہا ہوں(ایم۔ ڈی)  

Saturday, March 10, 2012

'' کراچی وال چاکنگ ''

منجانب فکرستان پیش ہے : کیا یہ حیرت کی بات نہیں ہے ؟؟؟
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
محترم جناب افتخار اجمل بھوپالی صاحب نے پوسٹ '' محبت'' پر تبصرہ میں اپنی والدہ ماجدہ کی محبت کا تذکرہ کیا ، اُسے شائع ہونا چاہئیے تھا، لیکن پبلشنگ کی بندش کی وجہ سے شائع نہ ہوسکا،ایسے تبصروں کی اشاعت کیلئے گنجائش نکالنی ہوگی۔۔۔کراچی میں مہاجر صوبے کیلئے نہ صرف وال چاکنگ ہوئی ہے بلکہ پوسٹر بھی لگائے گئے ہیں، جس پر سندھ اسمبلی میں ایک متفقہ قرارداد منظور ہوئی ہے جس میں وال چاکنگ کی مذمت کی گئی ہے اور سندھ حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ اس عمل کے پسِ پشت عناصر کو بے نقاب کیا جائے ۔۔۔اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کراچی کے تمام علاقوں میں وال چاکنگ ہوگئی، پوسٹر لگ گئے، اتنا سب کچھ ہوگیا لیکن حکومتِ وقت کو یہ تک معلوم نہیں ہوسکا کہ یہ کن لوگوں کی کارستانی ہے ؟یہاں تک کہ اسمبلی  میں حکومت سے مطالبہ کیا جارہا ہے کہ ایسے عناصر کو بے نقاب کیا جائے۔کیا یہ حیرت کی بات نہیں ہے ؟؟؟
 نوٹ : بحث کی راہ دکھانے والے تبصرے شائع نہیں ہونگے ۔۔۔آپکا بُہت شُکریہ۔ (ایم ۔ ڈی)

Friday, March 9, 2012

'' محبت ''

منجانب فکرستان پیش ہے: ڈاکٹر جاوید اقبال کے مقالہ سے ماخوز پوسٹ " محبت0-heartbeat.gif"   
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
ڈاکٹر جاوید اقبال  کہتے ہیں کہ '' کئی بار خیال آیا کہ میں اپنے والدین  کا حقیقی بیٹا نہیں ہوں، بلکہ انہوں نے مجھے کسی سے لے کر پالا ہے  ''اسطرح کی  سوچ پیدا ہونے کی وجہ کے بارے میں وہ بتاتے ہیں کہ'' علامہ نے کبھی ایسا موقع نہیں دیا جس سے میں انکی شفقت ،الفت یا محبت کا اندازہ لگا سکوں ،والدین اپنے بچوں کو اکثر پیار سے بھینچا کرتے ہیں ،اُنہیں گلے لگاتے ہیں ،اُنہیں چومتے ہیں، مگر مجھے انکے خدوخال سےکبھی اس قسم کی شفقت پدری کی موجودگی کا احساس نہیں ہُوا  ( علامہ نے میری پیدائش کیلئے حضرت مجدد کی درگاہ میں حاضر ہوکر اللہ سے بیٹے کی عطا کی دُعا مانگی تھی )،ان باتوں سے یہ نتیجہ اخذ کرنا کہ اُنہیں مجھ سے محبت نہیں تھی سرا سر غلط ہے ۔انکی محبت کے اظہار میں ایک قسم کا ضبط محبت تھا ، گہری خاموشی تھی، اس محبت کی نوعیت فکری یا تخیلی تھی جس تک میرا ذہن نارسا پہنچنے کی اہلیت اُس عُمر میں نہ رکھتا تھا ۔۔۔۔۔ 
یہ پوسٹ مقالہ "اقبال ایک باپ کی حیثیت سے " سے ماخوذ ہے۔ 
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
دنیا میں ایسے بُہت سے والد ہیں جو علامہ کی طرح اپنے بچوں سے دل میں محبت رکھتے ہیں مگر جس کا وہ اظہار نہیں کرتے ممکن ایسے مفکر قسم کے لوگوں کو اظہار محبت کرنے میں عامیانہ پن محسوس ہوتا ہو۔1-think.gif
میری رائے سے آپکا متفق ہونا ضروری نہیں ۔۔۔آپکا بُہت شُکریہ ۔۔۔(ایم ۔ ڈی )
تبصروں کی پبلشنگ بند ہے۔۔۔

Thursday, March 8, 2012

" خبروں پر تبصرے "

منجانب فکرستان پیش ہے: ایم۔ڈی کے تبصرے ٭کتنے اچّھےgud.gif کتنے بُرے 1-think.gif   ؟؟؟؟؟
 ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
1#: واشنگٹن ریپبلیکن صدارتی امید وار رون پائول نے دُنیا پر حُکمرانی کی امریکی پالیسی پر سخت تنقید کرتے ہوئے  امریکی حکمرانوں سے کہا ہے کہ  اگر تم توقع کرتے ہوکہ دُنیا پر اپنی حکمرانی جاری رکھ سکو گے تو یاد رکھو کہ ایسا نہیں کر پاؤ گے ۔۔۔ امریکی عوام ایران یا شام پر جنگ مسلط کرنے کے متحمل نہیں ہیں ۔۔۔ امریکی عوام کے مسائل کی اصل وجہ فوجی اخراجات ہیں ۔۔۔ وہ اقتدار میں آکر فوجی اخراجات میں کمی کریں گے۔۔۔امن اور خوشحالی کو فروغ دینا ہے تو جنگ کی پالیسی کو ترک کرنا ہوگا ۔۔۔ تبصرہ: پائول بھائی آپ کے منہ میں گھی شکر۔۔۔ کاش آپ کی طرح دُنیا کے تمام حُکمراں  فوجی اخراجات میں کمی کرنے کا سوچ لیں تو دُنیا کے انسان بھوک، جہالت اور بیماریوں پر قابو پا سکتے ہے ۔۔۔  #2: افغانستان میں 6 برطانوی فوجیوں کی ہلاکت پر وزیرِ اعظم ڈیوڈ کیمرون نے کہا آج کا دن انتہائی افسوس ناک ہے۔۔۔ تبصرہ: ڈیوڈ کیمرون صاحب آپکے فوجیوں نے بیشمار بے گناہ انسانوں کو مار دیا۔۔ایک انسان ہونے کے ناتے کیا کبھی اس پر بھی افسوس ہُوا ؟؟؟   نواز شریف نے شمولیت پریس کانفرس میں ماروی میمن کا 15 بار شکریہ ادا کیا ۔۔۔تبصرہ: بھائی کاؤنٹر  15 بار کا اندازہ ایسے ہی ٹھوک دیا  ہے یا ہاتھ میں کاؤنٹر بھی تھا   ویسے قوم اچھی طرح جاتنی ہے کہ ماروی میمن نے  ن لیگ میں شمولیت کا فیصلہ خالصتاً قومی مفاد میں کیا ہے۔قومی مفاد زندہ باد  #3:  وحیدہ شاہ 2 سال کیلئے نا اہل تبصرہ: میرے خیال میں میڈیا نے تھپڑ کو بار بار دِکھا کر وحیدہ شاہ کو جو رسوائی دی وہ ایسی سزا ہے جو ہمیشہ انکے ساتھ رہے گی،  ۔۔۔تبصروں کی پبلشنگ بند ہے ۔۔۔
میرے تبصروں سے آپکا متفق ہونا ضروری تو نہیں ۔۔۔ بُہت شُکریہ۔ (ایم ۔ڈی)
ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

Friday, March 2, 2012

کیا آپ بدھ مذہب کے پیروکار ہیں ؟؟؟

منجانب فکرستان پیش ہے پوسٹ ٹیگ: قادیانی/اے این پی/حضرت علی/شیعہ/ٹیبل ٹاک۔
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
 پوسٹ "عبدالماجددریابادی" پر تبصرہ آیا، کیا آپ بدھ مذہب کے پیروکار ہیں؟ وجہ اسکی یہ ہے کہ یہ پوسٹ "انسانی سوچ" کے حوالے سے لکھی گئی ہے۔ اس پوسٹ میں حالیہ گلگت واقعہ اور بامیان میں بُدھا مجسمہ کی تباہی کے واقعہ کو ایک ہی سوچ کا شاخسانہ لکھا تھا ، اسی طرح ایک پوسٹ میں حوالے کیلئے ڈاکٹر عبدالسلام کا نام لکھا تو تبصرہ آیا تھاکہ کیا آپ قادیانی ہیں ؟ اسی سے جُڑا ہُوا ایک سیاسی واقعہ بھی یاد آگیا ہے کراچی میں اردو بولنے والوں اور پشتو بولنے والوں کے درمیان جھگڑے ہورہے تھے خون بہنا شروع ہوگیا تھا کہ پشاور سے اے این پی کے سربراہ ولی خان آگئے پٹھانوں کے علاقے قائدآباد میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ جھگڑوں کا حل ایکدوسرے خون بہانا نہیں اسکا حل ٹیبل ٹاک ہے۔۔۔ میں نے اپنے حلقہ احباب میں ولی خان کے بیان کی تعریف کی تو مجھ سے کہا گیا ۔۔کیا آپ اے این پی میں شامل ہوگئے ہیں ؟؟ جبکہ حضرت علی کا قول ہے کہ یہ مت دیکھو کون کہہ رہا ہے۔۔ بلکہ یہ دیکھو کہ کیا کہہ رہا ہے ۔۔۔مگر یہ کیا میرے کان میں تو ابھی سے یہ آواز آنا شروع ہوگئی ہے ۔۔۔ کیا آپ شیعہ ہوگئے ہیں ؟؟؟۔۔۔۔افسوس ہم کتنے تنگ نظر ہیں کہ کسی کی کہی ہوئی اچھی بات کی تعریف بھی نہیں کرسکتے ہیں ۔۔۔محترم اس پوسٹ سے آپ کو اپنے تبصرہ کا جواب بھی مل گیا ہوگا۔۔۔ اب اجازت دیں آپکا بُہت شُکریہ( ایم ۔ڈی) 
نوٹ : تبصروں کی پبلشنگ بند ہے     

'' انسانی ذہن کی اثر پزیری صفت''

منجانب فکرستان پیش ہے:بات ہے یہ انسانی ذہن کی آپ بیتی عبدالماجددریابادی کی !!! 
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
ایک وضاحت اس پوسٹ کے بارے میں یہ ہے کہ عبدالماجد دریابادی  کی آپ بیتی کو اپنی بات کہنے کیلئے بطور حوالہ استعمال کیا ہوں ، باقی ساری خیال آرائی میرے ذہن کی پیداوار ہے۔جبکہ مکمل آپ بیتی کی تلخیص خاتون بلاگر قسط وار پیش کر رہی ہیں  اُنہوں نے  کتاب کا لنک بھی فراہم کیا ہے ،جس سے فائدہ اُٹھا کر عبدالماجد کی آپ بیتی پڑھ ڈالی، جسکا حا صل یہ  نِکلا کہ انسانی ذہن میں حد درجہاثر پزیری  کی صفت پائی جاتی ہے جس کی جسکی وجہ سے برسوں سے ذہن میں موجودمقدس عقیدوں کی ٹوٹ پھوٹ ہو جاتی ہے ۔۔۔  
عبدالماجددریابادی کی پیدائش مذہبی گھرانے میں ہوئی اور تربیت دینی موحول میں  گھر میں والدین بھائی بہن سب پابند صوم وصلوٰۃ تھے خود بھی باجماعت نماز کے پابند تھے   مطالعہ میں مذہبی کتابیں تھیں، مسیحوں اور نیچریوں کے خلاف مضامین بھی لکھتے تھے غرض کہ اسلام سے حد درجہ عقیدت تھی ۔۔۔پھر ہُوا یہ کہ ایک عزیز کے پاس  "ایلیمنٹس آف سوشل سائنس" نامی کتاب دیکھی پڑھنے کا چسکا تو تھا پوری کتاب پڑھ ڈالی یہ کتاب مذہبیات کی نہیں عقلیات پر تھی،پڑھنے کے بعد  انکے ذہن میں عقلیات اور مذہبی عقیدوں کے درمیان جنگ چھڑ گئی  جس کے اثر کا نتیجہ خود انکی زبانی { مذہب کی حمایت ونصرت میں ابتک جوقوت جمع کی تھی وہ اتنی شدید بمباری کی تاب نہ لاسکی ۔۔۔ شک بدگمانی تخم ریزی مذہب و اخلاقیات کے خلاف خاصی ہوگئی ،لاحول ولا قوۃ اب تک کس دھوکے میں پڑے رہے، تقلیداً اب تک جن چیزوں کو جزوایمان بنائے ہوئے تھے۔ وہ عقل و تنقید کی روشنی میں کیسی بودی کمزور اور بے حقیقت نکلیں}۔۔۔
اسکے بعد مذہبی کتابوں کی جگہ بیکن،لاک، ہیوم، ہیگل، ڈارون اور مل کی کتابوں نے لے لیں انکے اثر کے طفیل ماجد صاحب اب پکے ملحد بن گئے ۔۔۔
ماجد صاحب پر 10سال تک الحاد کا رنگ چڑھا رہا پھر ہوسٹل کے پُرانے  ساتھی ڈاکٹر محمد حفیظ کے رغبت دلانے پر تصوف پر مبنی لٹریچر  کنفوشس ،بدھ مت،جین مت ، تھیا سوفی  ، اور ہندو تصوف  اوربھگوت گیتا  نے تو گویا انکو روحانیت میں ڈبودیا پھر رومی، جامی، عطار، وارث کے لٹریچر نے ماجد صاحب کو اسلامی تصوف کی جانب موڑ دیا،  ایک بار پھر ذہن میں مادیت اور روحانیت کے درمیان جنگ چھڑ گئی جس کے اثر کو ان الفاظ میں بیان کرتے ہیں  { مادیت، لاادریت و تشکیک کی جو سر بفلک عمارت برسوں میں تعمیر ہوئی تھی وہ دھڑام سے زمین پر آرہی}۔۔۔
 اب مادیت کی جگہ تصوف کا رنگ چڑھ گیا  پھر حیدرآباد دکن میں اُنہیں محمد علی لاہوری احمدی کیانگریزی میں لکھی قُرآن مجید کی تفسیر پڑھنے کو ملی جس کے اثر کے  بارے کہتے ہیں کہ {انگریزی قُرآن کو ختم کرکے دل کو ٹٹولا تو اپنے آپ کو مسلمان پایا ۔اور اب اپنے ضمیر کو دھوکہ دیے بغیر کلمہ شہادت بلا تامل پڑھ چُکا تھا }۔۔۔
ابھی ہم نے عبدالماجد دریابادی کی صورت میں ذہنِ انسانی کی اثر پزیریت کی صفت کو دیکھا کہ مورثی اعتقادات جسکی آبیاری 16/15سال تک مسلسل ہوتی رہی پھر انِ اعتقادات کو گھر کا ماحول ، خاندان،مسلم معاشرہ اور اسلامی لٹریچر برابر تقویت دیتا رہا لیکن  پھر بھی یہ اعتقادات عقلیات کی ایک کتاب "ایلیمنٹس آف سوشل سائنس" کے آگے ٹہر نہ سکے وجہ اسکی یہ ہے کہ  ماجدصاحب نے مذہبی اعتقادات کو عقل کی کسوٹی سےپرکھنے کی کوشش تھی۔۔۔
تمام مذاہب مذہبی عقیدوں پر استوار ہوتے ہیں اور یہ بے ضرر ہوتے ہیں،اِن میں رواری، اور بھائی چارہ ہوتا ہے ۔ مثال کیلئے کسی بھی مذہب  کےبانی  کی سیرت کو دیکھ لیں اس  میں رواداری اور بھائی چارہ ملے گا، اسلام سے مثال محمدﷺ کی سیرت ہے ۔۔۔
ہوتا یہ ہےکہ ان بے ضرر مذاہب میں مذہبی عالم اپنی عقل داخل کرتا ہے اور پھر اس میں سے اپنی عقل سے میچ کھاتا فرقہ برآمد کرتا ہے ، اس طرح مختلف مذاہب کے مذہبی عالم مذاہب سے اپنی اپنی عقل سے میچ کھاتے فرقے برآمد کرتے ہیں  چونکہ فرقے انسانی عقلی دلائل پر کھڑے ہوتے ہیں، اس لیے انِ میں انانیت، تنگ نظری،مذہبی تعصب، عدم برداشت، پایا جاتا ہے۔ ہر مذہب کے عُلما انسانی ذہن کی اثرپزیریت کی صفت کو اپنے فائدے کیلئے استعمال کرتے ہیں۔ یہ چرب زبان مذہبی عُلما اپنے پیرو کاروں کے ذہنوں یہ بات راسخ کرادیتے ہیں کہ صرف اُنکا فرقہ ہی حقانیت پر قائم ہے دوسرے تمام فرقے مذہب دشمن فرقے ہیں ۔اور یہ فرقے  مذہب میں گند پھیلا رہے ہیں اس لیے اِن کو مارنا ثواب ہے،یوں بے ضرر عقائد پر مبنی مذاہب میں عقلی دلیوں پر قائم فرقوں کے  ضرر کاری  داخل ہو جاتی ہے ۔جسکی مثال حالیہ گلگت کا واقعہ ہے۔یہ بس والا واقعہ تصور میں لائیں تو رونگتے کھڑے ہوجاتے ہیں ،ایسے واقعات سے مُجھے داتا دربار کی وہ وڈیوبھی یاد آجاتی ہے جس میں دو مولوی ثواب کمانے ،جنّت میں جانے کیلئے داتا دربار کو انسانی خون سے نہلادیا ۔۔۔   
گلگت کا واقعہ ہو یاکہ بامیان میں بدھا کا مجسمہ گرانے کا واقعہ ان سب میں انسان دشمن فرقہ پرست علما کا پھیلایا ہوا زہر ملے گا۔ چونکہ ہم نے عبدالماجددریابادی کی صورت میں انسانی ذہن کی اثرپزیریت کی صفت کو دیکھ چُکے ہیں کہ کس طرح ایک اعلیٰ تعلیم یافتہ ذہن کو انسانی تحریروں نےاس حد تک مُتاثر کیا  کہ برسوں کے قائم  مورثی  خاندانی مذہبی عقائد سب بے معنی ہوگئے۔۔۔
میں گاہے بہ گاہے فرقہ پرستی کے خلاف اس لیے بھی لکھتا ہوں کہ میری تحریر  سے کسی ایک فرقہ پرست انسان کے ذہن سے فرقہ پرستی کی لعنت  ( یعنی دوسرے فرقوں یا  مذاہب سے نفرت) ختم ہوجائے، تو شاید میری بخشش ہوجائے ۔۔۔اب اجازت دیں آپکا بُہت شُکریہ ۔۔۔(ایم ۔ ڈی)
ایک اور وضاحت:میں چاہتا تھا کہ خاتون بلاگر اپنی قسطیں ختم کریں تو پھر میں یہ پوسٹ لکھوں ۔۔دریافت کرنے پر خاتون بلاگر نے کہا کہ آپ پوسٹ لکھیں اسی بہانے ممکن ہے کُچھ تبصرے آجائیں  ۔  
 نوٹ :ایک بار پھر مُجھے تبصروں کی پبلشنگ بند کرنی پڑ رہی وجہ اسکی یہ کہ ہمارے بلاگر ساتھی کا ایک تبصرہ شائع کردیا اور کہہ دیا کہ دیکھیں ایسا تبصرہ نہ کریں جس سے بحث کا پہلو نکلتا ہو چونکہ بحث سے سوائے رنجشوں کے کچھ حاصل نہیں ہوتا یہ میرا تجربہ ہے۔۔۔اسکے  جواب  میں اُنہوں نے دوسرا تبصرہ بھی بحث کی راہ دکھانے والا کیا جسے میں نے ڈلیٹ کردیا ساتھ میں ان سے معذرت  کی"انا" کوبھی آڑے آنے نہیں دیا ۔۔۔لیکن اسکے باوجود اُنہوں نے "مکالمہ"  کے عنوان سے میرے خلاف پوسٹ لکھ ڈالی افسوس کہ مجھے بھی وضاحت دینی پڑی لیکن یہ کوئی اچھی بات نہیں ہوئی ۔۔۔اب میں اپنے قارئین کو گواہ بناکر اُن سے وعدہ کرتا ہوں کہ وہ میرے بارے میں جو چاہیں لکھیں میں اُنکے بارے میں کچھ نہیں لکھوں گا ۔۔۔